Home Blog

پی ایس ایل میں شریک غیرملکی کھلاڑی میں کورونا وائرس کا شبہ، پی ایس ایل ملتوی

0
PSL Cancelled due to Corona virus

پی ایس ایل ملتوی کرنے کا فیصلہ کھلاڑیوں، آفیشلزکاتحفظ ہے، وسیم خان

کورونا وائرس کی علامات ظاہر ہونیوالا کھلاڑی غیر ملکی ہے۔ چیف ایگزیکٹو پی سی بی

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ نے کورونا وائرس سے تحفظ کیلئے پاکستان سوپرلیگ پی ایس ایل ملتوی کردی۔

تفصیلات کے مطابق، پاکستان سوپر لیگ میں شامل ایک غیرملکی کھلاڑی میں کورونا وائرس کی علامات ظاہرہونے کےبعد پی ایس ایل کے باقی میچزمنسوح کردیئے گئے۔ چیف ایگزیکٹو پاکستان کرکٹ بورڈ وسیم خان کے مطابق پی ایس ایل کے باقی مانندہ میچزکودوبارہ کروایا جائے گا جس کا اعلان حالات بہترہونے سے قبل ممکن نہیں۔

وسیم خان نے اس بات کی تصدیق کی کہ ایک غیرملکی کھلاڑی میں جوپاکستان سوپرلیگ میں شریک تھا کورونا وائرس کی علامات پائی گئیں ہیں جس کیوجہ سے پی ایس ایل منسوح کی۔

مزیدپڑھیں: کورونا وائرس کا علاج دریافت، مسلمانوں کیلئے خوشی کی خبر

انہوں نے کہا کہ پی سی بی نے یہ اقدام کھلاڑیوں اور آفیشلز کی حفاظت کیلئے کیا۔ ہم نے سب کیلئے تمام حفاظتی اقدامات اٹھائے اوربغیرتماشائیوں کے میچزجاری رکھنے کی کوشش کی مگراب خطرات اتنے بڑھ چکے ہیں کہ اب اس کو جاری رکھنا بہترنہیں۔ انہوں نے پی ایس ایل میں شریک تمام غیرملکی کھلاڑیوں کاشکریہ ادا کیا کہ انہوں نےآخری وقت تک بغیرکسی خود کے پی ایس ایل میں اپنی شرکت یقینی بنائی۔

یادرہے،اس سے قبل کوروناوائرس کےپاکستان میں کیسز سامنے آتے ہی پی سی بی نے تمام غیرملکی کھلاڑیوں کوپی ایس ایل جاری رکھنے یا وطن واپس جانے کی فرمائش کردی تھی جسکے بعد کئی غیرملکی کھلاڑِی وطن واپس جاچکے ہیں۔

اسلام آباد کے پمزہسپتال نے مقامی لوگوں کے کورونا ٹیسٹ سے انکارکردیا

0
PIMS Islamabad Corona action - Urdu

مبینہ کرونا وائرس کا شکار افراد پرائیویٹ لیبارٹریزسے ٹیسٹ کروائیں، انتظامیہ نے نوٹس چسپاں کردیئے۔ کالم نگار عَِفت حسن کا دعوی

اسلام آبا د: وفاقی دارلحکومت اسلام آباد کے پمز ہسپتال کی انتظامیہ نے مقامی افراد کےکورونا ٹیسٹ کرنے سے انکار کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق، کالم نگارعِفت حسن رضوی نے اپنی ایک سوشل میڈیا ویڈیو میں یہ دعوی کیا ہے کہ اسلام آباد پمز ہسپتال نے مقامی شہریوں کا کرونا وئارس کا ٹیسٹ کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ پمز ہسپتال مین صرف ان لوگوں کے بلڈ سنمپل لئے جا رہے ہیں جن افراد نے 14 دن میں ملک سے باہر سفر کیا ہے۔

پمز انتظامیہ کی جانب سے ایمرجنسی کے باہرچسپاں کیا گیا نوٹس

ایک اور سوشل میڈیا ایکٹوسٹ اقصی یسین نے عفت حسن کے اس دعوے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں اورانکی فیملی کوشدید بخار،کھانسی اور نزلہ کی شکایت پر پمزمیں دھکے کھانے پڑے،سرد موسم اورلمبی قطارمیں انتظار کے بعد جب ایمرجینسی کائونٹرتک رسائی ملی تو کہا گیا نزلہ، زکام کے مریضوں کو ایمرجینسی میں معائنہ کرنے سے منع کیا گیا ہے آپ نئی ایمرجینسی کورونا ڈسک پر جائیں، اقصی کے مطابق وہاں بھی قطار کے لگنے کے بعد معائنہ سے انکارکردیا گیا کہ آپ این آئی ایچ میں جاکر چھ ہزار روپیہ دیں اور ٹیسٹ کروائیں۔

مزید پڑھیں: کورونا وائرس کا علاج دریافت، مسلمانوں کیلئے خوشی کی خبر

ہمز ہسپتال انتظامیہ کا مریضوں سے رویہ انتہائی ہتک آمیز ہے اورمعمولی نزلہ زکام کے مریضوں کو بھی معائںے کیلئے رسوا ہونا پڑتا ہے۔ عام شہریوں کو کرونا کا شبہ ہونے پر انہیں پرائیویٹ ہسپتالوں سے رابطہ کرنے کا مشورہ دیا جا رہا ہے۔ اگر آپ کو کسی ڈاکٹر نے پمز ہسپتال بھیجا ہے پھر بھی آپ کو این آی ایچ رابطہ کرنے کی ہدایت دی جا ئے گی۔

عفت حسن رضوی نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے دعویٰ کیا تھا کہ پاکستان نے کرونا وائرس سے نمٹنے کیلئے تیاریاں کر رکھی ہیں تاہم عام شہریوں کو کرونا وائرس کے شبہ میں پمز اسپتال ٹیسٹ نہیں کرتا۔

سندھ میں کرونا وائرس کے کیسز کی تعدا د 76 جبکہ پاکستان میں کرونا وائر کی تعدا د94 سے بڑھ گئی ہے۔

یادرہے، کورونا وائرس کی بڑھتی تعداد کے باعث ملک بھرکے تعلیمی اداروں کو 5 اپریل تک بند کردیا گیا ہے۔ عالمی ادارہ صحت نے کورونا سے نمٹنے کیلئےحکومت پاکستان کے اقدامات کو سراہا ہے۔

کورونا وائرس کا علاج دریافت، مسلمانوں کیلئے خوشی کی خبر

0
Corona virus and Islam - Urdu

کراچی (خصوصی رپورٹ) کورونا وائرس کے چرچے زبان زد عام ہیں اور یہ وائرس دنیا کے 140 ممالک میں 2 لاکھ لوگوں کو متاثر جبکہ 6 ہزارکے قریب جانیں لے چکا ہے اورابھی تک اس وائرس کی کوئی دوائی ایجاد نہیں ہوسکی ہے۔

مسلمانوں کیلئے یہ سعادت مندی کی بات ہے کہ رسول اللہﷺنے 14سو سال قبل ہی جان لیوا وباء سے نمٹنے کا حل بتا دیا تھا، رسول پاکﷺ کے طریقہ پر عمل کرکے دنیا کو وائرس کے مہلک اثرات سے بچایا جا سکتا ہے، حکومت کو چاہیے اسی طریقے کو لے کر لوگوں میں آگاہی مہم بھی چلائی جائے۔

محققین کے مطابق،رسول اللہ ﷺ نےفرمایا کہ جب کسی علاقے میں طاعون پھیلنے کی خبر سنو تو وہاں سے مت بھاگو، قسمت ہیں، کہ ان کا تعلق ایک مذہب اسلام ہے، مقصد یہاں کسی دوسرے مذہب کو کم تر سمجھنا نہیں، بلکہ دوسرے مذاہب کا احترام اپنی جگہ لیکن اسلام دنیا پر بسنے والے تمام لوگوں کیلئے ایک مکمل ضابطہ حیات ہے۔

جس میں زندگی گزارنے کے اصولوں سے لے کر جان لیوا بیماریوں، قدرتی آفات سے نمٹنے کا حل بھی بتا دیا گیا ہے، قرآن پاک اللہ پاک کی کتاب جو مسلمانوں کیلئے ایک نعمت ہے،جس سے مسلمان ہی نہیں بلکہ پوری دنیا مستفید ہو رہی ہے۔

مزید پڑھیں: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو کورونا وائرس خطرہ، بس رپورٹ کا انتظار

اگر کورونا وائرس جس نے پوری دنیا میں خوف طاری کیا ہوا ہے، معیشت تباہ ہورہی ہے، اسٹاک مارکیٹس شدید مندی کا شکار ہیں، اس سنگین موجودہ صورتحال کو دیکھا جائے تو بھی اسلام ان موذی وباء سے نمٹنے میں ہماری رہنمائی فرما رہا ہے۔

رسول اللہﷺنے 1400 سال پہلے کورونا جیسی وباء سے نمٹنے کا طریقہ بتا دیا تھا۔ رسول اللہ ﷺ نےفرمایا کہ جب کسی علاقے میں طاعون پھیلنے کی خبر سنو تو وہاں مت جاؤ، اور جس علاقے میں تم موجود ہو اور طاعون پھوٹ پڑے تو ڈر کر باہر مت بھاگو۔ صحیح مسلم اور بخاری میں یہ دونوں احادیث نقل ہوئی ہیں جن کے مطابق کسی وبا کی صورت میں متاثرہ علاقے سے باہر نکلنا اور اس علاقے میں داخل ہونے سے منع فرمایا گیا ہے۔

دوسری جانب کورونا وائرس کا پھیلاوٴ کو روکنے کیلئے حکومت پنجاب کی جانب سے کتابچہ جاری کیا گیا ہے، یہ کتابچہ لوگوں میں آگاہی مہم کے تحت تیار کیا گیا۔ جس کے ذریعے کورونا وائرس سے بچاؤ کی حفاظتی تدابیر سے لوگوں کو آگاہ کیا جائے گا۔ تمام ڈی ای اے اور سی ای اوز ایجوکیشن کو ہدایت جاری کی گئی ہیں کہ یہ کتابچہ تمام نجی و سرکاری سکولوں میں لگائیں جائے تاکہ کورونا وائر س کیخلاف جاری جنگ کو جیتا جا سکے۔

بتایا گیا ہے کہ کھانسی یا چھینک کے ساتھ خارج ہونے والی بوندیں یا ذرات وائرس کی دوسروں میں منتقلی کا باعث بنتا ہے۔ شعور اُجار گر کرتے ہوئے کہاگیا ہے کہ اگر آپ کسی کو کھانستے یا چھینکتے دیکھیں تو کھانسنے والے شخص کم از کم ایک میٹر تک دور رہیں۔ جبکہ ماسک کا استعمال صرف بیمار افراد کیخلا ف کیلئے ہے۔ صحت مند افرد کو ماسک لگانے کی ضرورت نہیں ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو کورونا وائرس نہیں، ٹیسٹ سے سب معلوم ہوگیا

0
Trump has corona virus - Urdu

نیویارک: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی کورونا وائرس کی ٹیسٹ رپورٹ منفی آگئی۔ صدر ٹرمپ کی میڈیکل رپورٹ تسلی بخش ہیں، امریکی صدر میں کورونا وائرس کی تشخیص نہیں ہوئی۔

تفصیلات کے مطابق، چندروز قبل ٹرمپ سے ملاقات کرنے والے دو برازیلین حکام میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی جس کے بعد وائٹ ہائوس کے میڈیکل ڈاکٹرز نے انہیں ٹیسٹ کرانے کا مشورہ دیا تھا۔

ہفتہ کو ٹرمپ نے اپنے بیان میں کہا کہ کورونا وائرس کا ٹیسٹ کرا لیا ہے اور اب رپورٹ کا انتظار کر رہا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ مجھے بخار نہیں، میری حالت نارمل ہے تاہم ڈاکٹرز کے مشورے کے بعد احتیاطی تدابیر کے طور پر ٹیسٹ کرایا ہے۔

مزید پڑھیں: موجودہ حکومت نے معیشت کوتباہی کے دھانےتک پہنچا دیاہے۔ مولانافضل الرحمن

مجھے بخار نہیں، میری حالت نارمل ہے تاہم ڈاکٹرز کے مشورے کے بعد احتیاطی تدابیر کے طور پر ٹیسٹ کرایا ہے۔

میڈیکل ڈاکٹر نے ٹرمپ کے ٹیسٹ سے ایک روز قبل کہا تھا کہ امریکی صدر میں کورونا وائرس کی کوئی علامات ظاہر نہیں ہوئیں اس لیے انہیں قرنطینہ میں رکھنے کی ضرورت نہیں۔

یادرہے، کورونا وائرس دنیا کے 140 ممالک تک پھیل چکا ہے اور اس سے ڈیڑھ لاکھ کےقریب لوگ متاثر جبکہ 5000 سے زائد ہلاکتیں ہوچکیں ہیں۔ پاکستان میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 33 ہے جبکہ کوئی بھی ہلاکت نہیں ہوئی۔ حکومت پاکستان نے وائرس کے خدشے کے پیش نظر ملک بھرمیں ہیلتھ ایمرجینسی لگادی ہے اورعوامی اجتماعات پر پابندی اور سکولوں، کالجز، مدرسوں اور یونیورسٹیوں میں 05 اپریل تک تعطیل کا اعلان کیا ہے۔

موجودہ حکومت نے معیشت کوتباہی کے دھانےتک پہنچا دیاہے۔ مولانافضل الرحمن

0
Pakistan is in trouble only due to PTI - Urdu copy

اسلام آباد: جمیعت علماء اسلام کے امیرمولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ نااہل حکومت کی منفی پالیسیوں نے ملکی معیشت کو آئی ایم ایف کا محتاج بنادیاہے، اوراس وجہ سے لوگ ملک میں واپس آنے کے بجائے باہربھاگ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے شرح نمو2 فیصد دکھاکرقوم کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی کوشش کی اوراس حکومت نےآئی ایم ایف کے کہنے پرمہنگائی کررکھی ہے۔

اسلام آباد میں تحفظ آئین کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ نااہل حکمرانوں کی وجہ سے ملکی معیشت تباہ، سرمایہ غیر محفوظ، ملک میں کارخانے بند اور مہنگائی عروج پر ہے۔

مزیدپڑھیں: حکومت کا اہم اقدام، نوازشریف کو ڈی پورٹ کروانے کیلئے برطانیہ سے رابطے کا فیصلہ

سربراہ جے یو آئی (ف) نے کہا کہ سی پیک کو ناکام بنانے کے لیے نواز شریف کا نااہل کرنا ضروری تھا، نواز شریف اور زرداری سمیت سیاستداتوں کو سزائیں اسی مقصد کے لیے دی جارہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے ملک میں آئین ہے مگر آزاد اور زندہ نہیں ہے، طاقتور جب چاہیں قانون کی شکل بگاڑ لیتے ہیں، جس جج کے فیصلے اچھے نہ لگیں، ان کے خلاف ریفرنس آجاتے ہیں، عدلیہ اور وکلاء برادری آئین و قانون کو تحفظ نہ دے سکے تو ملک کہاں جائے گا؟

انہوں نے مزید کہا کہ محرومی کے احساس کو ختم کرنا ہے تو آئین پر عمل کرنا ہوگا، 18 ویں ترمیم سے صوبوں کے اختیار میں اضافہ ہوا ہے لیکن وفاق صوبوں کو اختیار دینے میں تامل کا اظہار کر رہا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ایک وقت تھا جب نریندر مودی کہتا تھا آؤ بات کریں، اب وہی مودی ہے جو ان کی بات بھی نہیں سنتا، حکومت کے پاس بھارت کے مسلمانوں کے حق میں آواز بلند کرنے کی صلاحیت ختم ہو چکی ہے۔

حکومت کا اہم اقدام، نوازشریف کو ڈی پورٹ کروانے کیلئے برطانیہ سے رابطے کا فیصلہ

0
Nawaz will be deported back, federal government decides - Urdu

اسلام آباد: نواز شریف کو ہرصورت واپس لائیں گے، انہیں واپس لانے کیلئے اورڈی پورٹ کروانے کیلئے وفاقی حکومت نے حکومت برطانیہ کو خط لکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ انکشاف معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے کیا، انہوں نے کہا کہ نوازشریف کی واپسی کا وقت آ پہنچا ہے، اگلے ہفتے ڈی پورٹ کرانے کے لیے برطانوی حکومت کو خط لکھیں گے۔

مزیدپڑھیئے: وفاقی وزیرآئی ٹی فواد چودھری نے رمضان المبارک کی تاریخ کا اعلان کردیا،نئی بحث چھڑگئ

ان کا کہنا تھاکہ امریکااورافغان طالبان کے درمیان امن معاہدہ ایک بڑی کامیابی ہے اورعمران خان کے نظریئے کی تائید ہے۔ افغانستان میں امن پورے خطے کے استحکام کے لئے ضروری ہے، امن معاہدے کیلئے پاکستان کا کردار سنہری حروف میں لکھا جائیگا۔

یاررہے، اس سے قبل سینئر تجزیہ کارحامد میرنے دعویٰ کیا تھا کہ میاں نواز شریف پاکستان واپس آئیں گےاورسیدھا جیل جائیں گے۔ نجی چینل کے پروگرام میں گفتگوکرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ نوازشریف جیل جانے کے لئے ہی پاکستان واپس آئیں گے۔ انہوں نےکہا کہ نوازشریف علاج کیلئے لندن گئے ہیں اورعلاج مکمل ہونے کے بعد واپس آجائیں گے ۔

پاکستان میں کروناکےمزید 2 کیسز، کیا غیرملکی کھلاڑی پی ایس ایل کھیل سکیں گے؟ اہم انکشاف

0
Corona virus and PSL - Urdu

کراچی: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اورکراچی میں کورونا کے مزید مریض سامنے آنے کے بعد پی ایس ایل میں موجود غیرملکی کھلاڑیوں کی اگلے مرحلے میں شمولیت پرشکوک وشبہات پیداہوگئے ہیں۔ کورونا کے مریضوں کی تعداد 4 ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق، آج کورونا کے دو مزید کیسز سامنے آئے جن میں سے ایک کا تعلق وفاقی علاقے سے جبکہ دوسرے کا تعلق کراچی سے ہے جوحال ہی میں ایران سے آیا ہے۔ معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ لوگوں کوکورونا سے ڈرنے کی نہیں بلکہ احتیاطی تدابیراختیارکرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی و صوبائی حکومتیں اوروزارت صحت کورونا وائرس سے متعلق اقدامات کررہی ہیں۔

معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹرظفرمرزا نے کہا کہ کورونا وائرس کے حوالے سے اجلاس3 گھنٹے جاری رہا۔ اجلاس میں متعلقہ وزارتوں، چیف سیکرٹریز سمیت اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ کورونا وائرس کے حوالے سے نیشنل ایکشن پلان ترتیب دے دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کورونا وائرس کے مزید2 کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔

مزیدپڑھیں: نواز شریف واپس آتے ہی سیدھا جیل جائیں گے،شہبازشریف کوروناکے خدشے کے پیش نظرمشاہدے میں رہیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پہلے رپورٹ ہونیوالے دونوں مریض تیزی سے صحت یاب ہورہے ہیں اورایران جانے والے زائرین کی واپسی شروع ہوچکی ہے۔ ایران سے فلائٹ آپریشن مناسب وقت پرشروع کریں گے۔ دوسری جانب محکمہ صحت حکومت سندھ کی جانب سے ایسے تمام خاندانوں کو جن کے کسی بھی فرد یا بچے کو گھر میں یا کسی ہسپتال میں قرنطینہ میں رکھا گیا ہے کو یہ ہدایت دی ہے کہ وہ کم ازکم اس روز جس روز وہ پاکستان لوٹے ہیں سے لے کر 14 دن تک اپنے بچوں کو اسکول نہ بھجیں۔

محکمہ صحت حکومت سندھ کی جانب سے یہ ہدایات کورونا وائرس کے ممکنہ پھیلاؤ کو روکنے کے حوالے سے جاری کی گئی ہیں۔واضح رہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ روزانہ کی بنیاد پر اس سلسلے میں متعلقہ وزارتوں کی اجلاس کی صدارت بھی کر رہے ہیں جن میں کورونا وائرس ممکنہ پھیلاؤ کو روکنے کے حوالے سے اقدامات کا جائزہ لیا جاتا ہے۔مندرجہ بالا ہدایات بھی سندھ کے وزیر اعلیٰ کی منظوری کے بعد جاری کی گئی ہیں۔

نواز شریف واپس آتے ہی سیدھا جیل جائیں گے،شہبازشریف کوروناکے خدشے کے پیش نظرمشاہدے میں رہیں گے۔انکشاف

0
Mian Nawaz Sharif will return, said hamid mir - Urdu

اسلام آباد: سینئر تجزیہ کارحامد میر نے دعویٰ کیا ہے کہ میاں نواز شریف پاکستان واپس آئیں گے اور سیدھا جیل جائیں گے۔ نجی چینل کے پروگرام میں گفتگوکرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ نوازشریف جیل جانے کے لئے ہی پاکستان واپس آئیں گے۔

انہوں نےکہا کہ نوازشریف علاج کیلئے لندن گئے ہیں اورعلاج مکمل ہونے کے بعد واپس آجائیں گے ۔ مریم نواز سے متعلق سوال پرحامد میر کا کہنا تھا کہ مریم کوباہرنہیں جاناچاہیئے۔

اس سے قبل وفاقی وزیرریلوےشیخ رشید احمد نے پریس کانفرنس سے خطاب میں کہا کہ شہباز شریف کوکورونا کے خدشے کے باعث پاکستان واپس آنے پرچودہ روزتک نگرانی میں رکھا جائیگا۔

مزید پڑھیں: نواز شریف نے پاکستان واپس آنے کا اعلان کردیا، ائیرایمبولینس تیار

یادرہے، سابق وزیراعظم میاں محمد نوازشریف ناسازی طبیعت کے باعث لندن میں موجود ہیں جہاں ان کی والدہ، بیٹے اوربھائی انکے ساتھ موجود ہیں۔ تاہم اب حکومت پنجاب نے نواز شریف کوعلاج کیلئے قیام کی مزید مہلت دینے سے انکارکردیا ہے۔

ذرائع کےمطابق، میاں محمد نواز شریف کی لندن میں پراسرار سرگرمیاں اور خفیہ ملاقاتیں ان کی ضمانت منسوخی کا سبب بنیں۔ معروف صحافی رانا عظیم نے رپورٹ میں بتایا کہ نواز شریف کو ضمانت دینے کے لیے پنجاب حکومت کے اندر دو آرا تھیں،کچھ لوگ توسیع کے حوالے سے موقف رکھتے تھے کہ حکومت خود کوئی فیصلہ کرنے کی بجائے عدالتی رحم و کرم پر چھوڑ دیں۔

میڈیکل رپورٹس کو بنیاد بنا کر کہا جائے کہ عدالت خود اس معاملے کو دیکھے۔ تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے ضمانت منسوخ کیے جانے کے بعد نواز شریف کا کہنا ہے کہ ان کی بیماری کو سیاست کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے، اسی لیے انہوں نے ہدایت کر دی ہے کہ ان کی پاکستان واپسی کے انتظامات کیے جائیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ نواز شریف کو پاکستان واپس لانے کیلئے ائیرایمبولینس کا انتظام کیا جائے گا، جبکہ ممکنہ طور پر ان کے ہمراہ غیر ملکی ڈاکٹرز اور دیگر طبی عملہ بھی پاکستان آ سکتا ہے۔

پاک فضائیہ کا نیا کارنامہ، کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کامیاب

0
PAF helped Quetta Gladiators to reach Multan - Urdu

ملتان: پاک فضائیہ نے پی سی بی کو بڑی خفت سے بچالیا، موسم کی خرابی کے باعث راولپنڈی سے ملتان کی تمام فلائٹس کینسل ہونے کے باعث کوئٹہ گلیڈی ایٹرزکو C-130 میں ملتان پہنچایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق، پاک فضائیہ نے کم ترین وقت میں C-130 طیارے کا انتظام کرکے نا صرف پی سی بی کو خفت سے بچایا بلکہ ایک بار پھر ثابت کیا ہے کہ تمام اداروں کے درمیان ہم آہنگی موجود ہے۔

مزید پڑھیں: سہاگ رات: پہلی رات ہی میں لٹ گئی، خدارا رحم کیجیئے

پی سی بی ذرائع کے مطابق، آج ٹیم کوئٹہ کی اسلام آباد سے ملتان کی فلائٹ شیڈول تھی جو خرابی موسم کے باعث کینسل کردی گئی اورکوئی کمرشل فلائٹ بھی دستیاب نہ تھی۔ ان مشکل حالات میں پاک فضائیہ نے محض تین گھنٹے قبل ٹیم گلیڈی ایٹرز کوC-130 میں راولپنڈی کے نورخان ائیربیس سےملتان پہنچایا۔

یاد رہے کہ پاکستان سپر لیگ(پی ایس ایل) کے پانچویں ایڈیشن میں ملتان سلطانز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 199 رنز بنا کرجیت کیلئے کوئٹہ کو 200 رنز کا پہاڑ جیسا ہدف دیا ہے۔ ملتان کی جانب سے رائلی روسونے دھواں دار بیٹنگ کرتے ہوئے صرف 43 گیندوں پر101 رنز بناکرپی ایس ایل کی تیزترین سنچری سکور کی۔

سہاگ رات: پہلی رات ہی میں لٹ گئی، خدارا رحم کیجیئے

0
When i cried at wedding night sex - Urdu

وہ میری زندگی کی سب سے تکلیف دہ رات تھی، میں روتی رہی چیختی رہی کہ وہ رک جائیں مگر انہوں نےزبردستی سیکس جاری رکھا۔

حبیبہ (فرضی نام) کا تعلق لاہور سے ہے۔ وہ نہیں چاہتیں کہ ان کا نام ظاہر ہو، لیکن وہ اپنی کہانی اس لیے سنانا چاہتی ہیں کہ اس کے ذریعے کئی نئے جوڑے سمجھ سکیں گے کہ پہلا سیکس ہمیشہ رومان پرور نہیں بلکہ بعض اوقات انتہائی تکلیف دہ مرحلہ بھی ہو سکتا ہے۔

حبیبہ کی شادی تین سال قبل ان کے کزن سے ان کی پسند اور خاندان کی رضامندی سے ہوئی تھی۔

‘منگنی کے بعد ہم ہر موضوع پر بات کرتے تھے یہاں تک کہ سیکس اور اپنے بچوں سے متعلق منصوبہ بندی بھی کرتے۔ ہم نے کئی بار پورن ویڈیوز پر بھی بحث کی اور یہ ویڈیوز شیئر بھی کیں۔ یعنی مجھے ایسا لگتا تھا کہ میری اہنے منگیتر سے دوستی ہے تو ہمارے درمیان سیکس مشکل نہیں ہو گا’۔

حبیبہ کہتی ہیں کہ ان کے شوہر بھی اس وقت یہی سمجھتے تھے کہ پہلی بار سیکس کا سب سے مشکل مرحلہ ‘ہائمن’ یا پردۂ بکارت کا پھٹنا ہوتا ہے جس کی وجہ سے خاتون درد محسوس کرتی ہے۔

’ہم دونوں سمجھتے تھے کہ شاید یہ درد چند سیکنڈز میں ختم ہو جاتا ہے۔ میرے شوہر کو شادی کے دن ان کے شادی شدہ دوستوں اور کزنز نے بھی یہی بتایا تھا کہ تم درد کے بارے میں نہ سوچنا، وہ تو قدرتی ہے، بس تمہیں ہر صورت سیکس کرنا ہے’۔

حبیبہ کہتی ہیں کہ شادی کے دن انھیں خوشی کے ساتھ اس بات پر غصہ تھا کہ وہ اپنے گھر سے دور جا رہی ہیں اور اس کے ساتھ کسی مرد کے ساتھ سیکس کا خوف بھی،’یہ سب کچھ مل کر مجھے تھکا رہا تھا اور میں چاہتی تھی کہ سب جلدی ختم ہو جائے’۔

انھوں نے بتایا کہ ’شادی کی رات سیکس کے وقت مجھے درد شروع ہوا اور چند ہی لمحوں میں یہ ناقابل برداشت ہو گیا، اب میں اپنے شوہر کو روکتی رہی، یہاں تک کہ میں نے چیخنا شروع کر دیا۔ ہم نے دیکھا کہ میرا بہت زیادہ خون بہہ رہا ہے، ہم نے انتظار کیا۔ مگر درد ختم ہوا نہ ہی خون بہنا۔ خون اس قدر بہہ رہا تھا کہ مجھے ہسپتال جانا پڑا’۔

مزید پڑھیں: وفاقی وزیرآئی ٹی فواد چودھری نے رمضان المبارک کی تاریخ کا اعلان کردیا،نئی بحث چھڑگئ

حبیبہ کو ان کے شوہر اور ساس ہسپتال لے کر گئے، جہاں ڈاکٹر نے بتایا کہ ان کے ’وجائنا‘ کو نقصان پہنچا ہے جس کی وجہ سے خون بہہ رہا ہے اور ان کا ’وجائینل ٹریک‘ اس قدر تنگ ہے کہ علاج کے بغیر سیکس نہیں ہو سکے گا۔

حبیبہ بتاتی ہیں کہ وہ بہت شرمندہ تھی اور انھیں لگ رہا تھا کہ وہ اپنے خاندان کے لیے شرمندگی کا باعث بنی ہیں۔ ’خاندان میں سبھی کو یہ بات پتا چل گئی تھی، „تاہم میرے شوہر اور ساس نے میری بہت مدد کی اور سمجھایا کہ یہ میرا قصور نہیں ہے’۔

ڈاکٹر نے کچھ سکینز اور اندرونی الٹراساؤنڈ کرنے کے بعد انھیں بتایا کہ ان کے ’ہائمن ٹشوز‘ موٹے ہیں جس کی وجہ سے سیکس میں مشکل پیش آئی ہے۔ اس کیفیت کو ہائپرٹرافائیڈ کہا جاتا ہے۔

ہائپرٹرافائیڈ کنڈیشن میں ہائمن میں سوراخ تو ہوتا ہے مگر اس بافت یا ٹشو کی موٹائی مختلف تہوں کی وجہ سے اس قدر زیادہ ہوتی ہے کہ بعض معاملات میں معمولی سرجری کے ذریعے ہی اس کو ہٹایا جا سکتا ہے۔

ڈاکٹروں کے مطابق ایسی صورتحال میں اگر مرد زبردستی سیکس کی کوشش کرے تو وجائنا کے ٹریک کو نقصان پہنچتا ہے۔ ڈاکٹرز کہتے ہیں کہ ایسی وجائنا جو کہ سیکس کے لیے تیار نہ ہو یا ایسی خواتین جنھیں ہائپرٹرافائیڈ ہو، انھیں شدید تکلیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

حبیبہ کی سرجری کی گئی اور انھیں ‘ڈائلیٹرز’ دیے گئے جنھیں ایک ماہ تک وجائینل ٹریک کھولنے کے لیے استعمال کیا گیا۔ ایک ماہ بعد ڈاکٹرز نے انھیں بتایا کہ اب وہ ازدواجی تعلق قائم کر سکتی ہیں۔

‘مگر مجھے شدید خوف تھا، میرا پہلا تجربہ اس قدر برا تھا کہ میں کسی صورت سیکس کے لیے تیار نہیں ہو پاتی تھی۔ یہ خوف دُور ہونے میں کچھ وقت لگا۔’

ڈاکٹرز کیا کہتے ہیں؟

لاہور سے تعلق رکھنے والی اینڈرولوجسٹ اور سیکسالوجسٹ ڈاکٹر ثمرہ امین چودھری کہتی ہیں کہ بعض اوقات خواتین کا جینیٹل ٹریک اس قدر تنگ ہوتا ہے کہ جنسی عمل خطرناک ثابت ہو سکتا ہے جیسا کہ حبیبہ کے ساتھ ہوا۔

’زبردستی سیکس کیا جائے گا تو اسے خاتون کے ویجائینل ٹریک میں چیرپھاڑ ہو گی جو کہ غیرمعمولی بات ہے اور شدید تکلیف دہ ثابت ہوتا ہے۔ اسے ٹانکے لگانے پڑتے ہیں، زخم رہ جاتے ہیںاور خاتون کی آئندہ ازدواجی زندگی کے لیے کئی مسائل جنم لیتے ہیں’۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ کسی بھی کامیاب شادی یا رشتے کے لیے جسمانی تعلق سے پہلے ذہنی ہم آہنگی ضروری ہے اور یہی رشتے کی مضبوطی کی بنیاد ہے۔

ان کے مطابق مردوں اور عورتوں ددنوں کو ہی مسائل پیش آتے ہیں اور ان سب مسائل کا علاج بھی ممکن ہے۔

‘ایک لڑکا اور لڑکی جو 25، 30 سال تک اس قسم کے کسی تعلق میں نہیں رہے، ان کی بہت سی فینٹسیز ہیں، انھوں نے فلموں میں، ٹی وی پر دیکھا ہوا ہے تاہم انھیں سمجھنا چاہیے کہ وہ ایک غیرحقیقی دنیا ہے اور یہ سب ویسے نہیں ہوتا۔ پہلے جوڑا آپس میں انسیت پیدا کرے، دوستی بڑھائے، ذہنی ہم آہنگی پیدا کرے اور اس کے بعد بتدریج جسمانی ہم آہنگی پیدا کرے’۔

وہ کہتی ہیں ‘سیکس زبردستی نہ کریں اور یہ ولیمہ حلال نہیں ہو گا جیسی دقیانوسی باتوں سے باہر نکلنے کا وقت ہے’۔

مرد کی پرفارمنس اینگزائٹی
ڈاکٹر ثمرہ کہتی ہیں کہ خواتین کے ساتھ ساتھ مرد کی نفسیات کو سمجھنے کی بھی ضرورت ہے۔ ان کے مطابق مرد کو شدید ‘پرفارمنس اینگزائٹی’ ہوتی ہے۔

‘پہلی بار سیکس کے وقت جس قدر کارکردگی کا دباؤ مرد پر ہوتا ہے اسے سمجھنا بہت ضروری ہے، وہ سوچتا ہے کہ کیا میں یہ سب کر پاؤں گا یا نہیں۔ اس پر خاندان کا دباؤ ہوتا ہے، دوستوں اور بھائیوں کا دباؤ ہوتا ہے یا پھر وہ خود اپنی ہی انا کے زیرِ اثر ہوتا ہے۔ یہ بات لڑکی کو پتا ہونی چاہییے کہ لڑکے پر ایسا دباؤ ہوتا ہے’۔

وہ کہتی ہیں کہ اس معاملے میں مرد کی کاؤنسلنگ کرنے کی ضرورت ہے اور اسے یہ سمجھنا چاہییے کہ اگر یہ عمل تکلیف دہ ہے تو اسے انتظار کرنا چاہییے۔

‘مرد کو بتانا ہے کہ عورت ایک نازک صنف ہے، یہ اس کا پہلا تجربہ ہے اور یہ یقین جانیں کہ ایک خاتون کے لیے یہ بہت تکلیف دہ مرحلہ ہوتا ہے۔ مرد کو واضح طور پر سمجھنا ہو گا کہ یہ ہرگز مردانگی دکھانے کا ذریعہ نہیں ہے’۔

نفسیاتی خوف کا شکار خواتین
ڈاکٹر ثمرہ امین چودھری کے پاس ایسے مرد اور خواتین مریض آتے ہیں جنھیں اپنی ازدواجی زندگی میں مسائل کا سامنا رہتا ہے۔

وہ کہتی ہیں کہ عام طور پر خواتین میں درد اور تکلیف کا خوف بہت زیادہ ہوتا ہے۔ جس کی ایک وجہ تو انھیں بار بار یہ سننے کو ملتا ہے کہ سیکس ایک تکلیف دہ عمل ہے جبکہ بعض اوقات شادی کے بعد شروع کے دنوں میں وجائنا کے زخمی ہونے جیسا حادثہ بھی ہو سکتا ہے۔

‘خواتین میں رہ جانے والا خوف بعض اوقات کاؤنسلنگ سے بھی ختم نہیں ہو پاتا۔ میرے پاس ایسے کیسز بھی آئے ہیں جن میں شادی کے بعد آٹھ سال تک جنسی تعلق قائم نہیں ہوا۔ اس کی وجہ صرف ایک تھی کہ خاتون کے دل میں ڈر بیٹھ گیا تھا۔ کیوں خاتون ڈری؟ خاص طور پر زخم یا کوئی پیچیدگی کی صورت میں نفسیاتی طور پر اگر ڈر بیٹھ گیا تو خاتون اس تعلق سے کبھی لطف اندوز نہیں ہو سکتی۔

تاہم وہ کہتی ہیں کہ پہلی بار سیکس کے دوران درد ہونا بالکل نارمل ہے۔ اگر یہ قابل برداشت نہ رہے تب ڈاکٹر سے بات کرنی چاہیے۔

‘خواتین کو میں بتاتی ہوں کہ تھوڑا درد تو برداشت کرنا پڑتا ہے۔ لیکن ڈائلیٹرز موجود ہیں جن کے استعمال کا سب کو علم ہونا چاہیے۔ ان سے شادی کے بعد بتدریج سیکس کے لیے ٹریک کو کھولا جاتا ہے’۔

ڈائلیشن کیا ہے؟

ڈاکٹرز کہتے ہیں کہ ڈائلیٹرز کے ذریعے وجائنل ٹریک کو بتدریج کھولا جاتا ہے تاکہ سیکس ممکن ہو سکے اور کسی قسم طبی ایمرجنسی نہ ہو۔

ڈاکٹر ثمرہ کے مطابق شادی کے بعد ڈائیلیٹرز استعمال کرنے سے ایک ماہ سے کم وقت میں ہی وجائنا سیکس کے قابل ہو جاتی ہے، جبکہ اس دوران شوہر کے لیے ضروری ہے کہ وہ بیوی کا جذباتی طور پر ساتھ دے’۔

لبریکیشن
ڈاکٹرز کے مطابق پہلی بار انٹرکورس اس لیے بھی تکلیف دہ ہوتا ہے کہ مختلف دباؤ اور درد کے خوف کے باعث وجائنل ٹریک میں لبریکیشن کم ہوتی ہے۔

‘اسی لیے ضروری ہے کہ شوہر اور بیوی میں پہلی بار یہ تعلق قائم کرنے کے موقع ہر اس قدر ہم آہنگی ہو کہ انھیں کوئی خوف نہ ہو جبکہ مارکیٹ میں مختلف لبریکینٹس دستیاب ہیں جنھیں استعمال کیا جانا چاہیے ‘۔

مشت زنی حقیقی ازدواجی تعلق کی راہ میں رکاوٹ؟


ڈاکٹر ثمرہ امین سمجھتی ہیں کہ ‘بہت زیادہ پورن ویڈیوز دیکھنے اور مشت زنی کرنے والے مرد اور خواتین دونوں ہی کو ازدواجی زندگی میں مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ان کے خیال میں ‘اب یہ ایک بڑی وجہ بن رہی ہے کہ شادیاں قائم نہیں رہ پاتیں’۔

وہ کہتی ہیں کہ ایسے جوڑے بھی آتے ہیں جو مشت زنی کے باعث کہتے ہیں کہ انھیں اپنے ساتھی میں کشش محسوس نہیں ہوتی۔ اس کے لیے بھی ادویات اور نفسیاتی علاج کیا جاتا ہے، جبکہ ہم ایسے جوڑوں کو مشورہ دیتے ہیں کہ وہ پورن ویڈیوز دیکھنا چھوڑ دیں اور صحت مند تعلق قائم کریں۔‘

ڈاکٹر ثمرہ کا یہ بھی کہنا ہے کہ بعض اوقات کچھ دیگر مسائل بھی پہلی بار جنسی تعلق قائم کرنے میں رکاوٹ بن سکتے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں والدین کا کردار بھی اہم ہے۔ ’اپنے بیٹے اور بیٹی کو سمجھائیں کہ یہ تعلق پیدا ہو جائے گا۔ جنسی تعلق قائم ہونا اہم ہے لیکن اس کا جلدی یا دیر سے ہونا اہم نہیں۔

’اگر یہ صورتحال ہے کہ کئی ماہ یا ایک سال ہوگیا ہے اور جنسی تعلق قائم نہیں ہو پایا تو پھر ڈاکٹر کے پاس جائیں۔ اس مسئلے کا حل موجود ہے اور ڈاکٹر آپ کو بتائیں گے کہ ٹریک کو ڈائیلیٹ کیسے کرنا ہے۔ اسی طرح مرد کے ساتھ کوئی مسئلہ ہے جیسے سرعت انزال یا ایستادگی تو بھی ڈاکٹر کے پاس آئیں۔ ان کا علاج ایک ماہ میں مکمل ہو جاتا ہے اور یہ ایسی وجوہات ہرگز نہیں کہ شادیاں ہی توڑ دی جائیں’۔

وفاقی وزیرآئی ٹی فواد چودھری نے رمضان المبارک کی تاریخ کا اعلان کردیا،نئی بحث چھڑگئ

0
Fawad Ch spars with clerics over moon sighting - Urdu

اسلام آباد : رویت حلال کمیٹی کی جانب سے ذیقعد اوررجب کی تاریخ غلط بتائی ہے، میں پارلیمان کی مذہبی کمیٹیوں کو تفصیلا بریف کروں گا۔ وفاقی وزیربرائے انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی نے رویت حلال کمیٹی پرالزام عائد کردیا جسکے بعد ایک نئی بحث کا آغاز ہوگیا ہے۔

فوادچوہدری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹرپراپنے پیغام میں کہا ہے کہ 24 اپریل کو رمضان المبارک کا چاند دیکھا جا سکے گا جبکہ 25 اپریل کو پہلا روزہ ہوگااوررویت حلال کمیٹی نے ذیعقد اور رجب کی تاریخ غلط دی ہے۔

گا جبکہ 25 اپریل کو پہلا روزہ ہوگااوررویت حلال کمیٹی نے ذیعقد اور رجب کی تاریخ غلط دی ہے۔

فوادچوہدری نے مزید کا کہ اس حوالے سے 5 مارچ کو پارلیمان کی مذہبی امور کی کمیٹیوں کو بریفینگ دوں گا۔ ماضی میں پاکستان میں دو عیدین منائے جانے کے حوالے سے کہنا تھا کہ عید اور اسلامی تہوار تقسیم کا نہیں بلکہ اتحاد کا باعث بنتے ہیں۔

واضح رہے اس سے قبل کہا جا رہا تھا کہ رمضان المبارک کے آغاز میں کم وقت رہ گیا، پاکستان میں رمضان کے مقدس ماہ کا چاند 23 یا 24 اپریل کو نظر آنے کا امکان، جبکہ عید الفطر 24 یا 25 مئی کو ہو سکتی ہے۔

پاکستان سمیت دنیا بھر میں رمضان المبارک کے آغاز میں کم ہی وقت رہ گیا ہے۔ رمضان المبارک دنیا بھر کے مسلمانوں کیلئے سب سے مقدس ترین مہینہ ہے اور اہل ایمان ہر سال اس ماہ کی آمد کا بے صبری سے انتظار کرتے ہیں۔ ملک میں رجب المرجب کا آغاز 2 روز بعد یعنی 26 فروری بروز بدھ کو ہو را۔ جس کے بعد رواں برس رمضان المبارک کے مقدس ماہ کے آغاز میں تقریباً 2 ماہ کا وقت باقی رہ گیا ہے۔ لوگوں ماہ مبارک کا بے صبری سے انتظار کر رہے ہیں اور جاننے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ رمضان کے ماہ کا آغاز کس تاریخ سے ہوگا۔ تاہم اب فواد چودھری نے رمضان کی تاریخ کا اعلان کردیا تھا اور بتایا ہے کہ 25 اپریل کو پہلا روزہ ہوگا۔

نواز شریف نے پاکستان واپس آنے کا اعلان کردیا، ائیرایمبولینس تیار

0
Sick Nawaz sharif plans to return pakistan - Urdu

لاہور:سابق وزیراعظم میاں محمد نوازشریف نے ضمانت منسوخی پران کی ملک واپسی کی تیاریاں کیے جانے کی ہدایت کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نے وطن واپس آنے کا فیصلہ کر لیا ہےاورحکومت کی جانب سے ضمانت منسوخ کیے جانے کے بعد نواز شریف کا کہنا ہے کہ ان کی بیماری کو سیاست کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے اوراسی لیے انہوں نے ہدایت کر دی ہے کہ ان کی پاکستان واپسی کے انتظامات کیے جائیں۔

ذرائع کے مطابق، نواز شریف کو پاکستان واپس لانے کیلئے ائیرایمبولینس کا انتظام کیا جائے گا، اورممکنہ طور پر ان کے ہمراہ غیر ملکی ڈاکٹرز اور دیگر طبی عملہ بھی پاکستان آ سکتا ہے۔

مزید پڑھیں: کورونا وائرس پاکستان پہنچ گیا، پہلا کیس کراچی میں سامنے آگیا

نواز شریف کی پاکستان واپسی کس تاریخ کو ہوگی یہ معلوم نہیں ہوسکا ہے۔ دوسری جانب سابق وزیر اعظم نواز شریف کی ضمانت میں توسیع کے معاملے پر پنجاب حکومت نے نواز شریف کے خلاف کارروائی کیلئے وفاق کو خط لکھ دیا۔

اس حوالے سے صوبائی وزیر قانون راجا بشارت نے کہا ہے کہ نواز شریف کیخلاف متعلقہ عدالت اور ٹرائل کورٹ میں وفاق جائیگا، وفاق کو مراسلہ بھجوا دیا، کارروائی کیلئے وہ اقدام کرینگے۔یاد رہے گزشتہ وز پنجاب کابینہ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی ضمانت میں توسیع دینے کی درخواست مسترد کی تھی۔

حکومت نے کہا ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد ہونے کے بعد نواز شریف مفرور ڈکلیئر ہو چکے ہیں وہ واپس نہ آئے تو انہیں اشتہاری قرار دیا جائے گا۔پنجاب کابینہ کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ میڈیکل بورڈ اور خصوصی کمیٹی کی طرف سے بارہا یاد دہانی کے باوجود نواز شریف کی مطلوبہ میڈیکل رپورٹس فراہم نہیں کی گئیں

HOT NEWS

CLIMATE CHANGE