Home Blog

Indian Army is committing war crimes in Kashmir: PM AJK

0

Muzaffarabad : The Azad Jammu and Kashmir (AJK) Prime Minister Raja Farooq Haider Khan on Sunday reiterated his appeal to the international community to take serious notice of blatant and frequent Indian ceasefire fire violations, which resulting into civilian causalities regularly.

In his reactionary statement over the unprovoked Indian firing at Haji Pir and Baiduri sectors in which a 13 years innocent girl martyred and her mother and brother were injured, he said Indian armed forces have crossed all limits of brutalities.

Strongly condemning the frequent Cease Fire Violations (CFL), the Prime Minister said that Indian forces were continuously targeting civilian population, schools and hospitals. “Indian Army is committing war crimes in Occupied Kashmir and at CFL”, PM added.

He urged United Nations’ Observer Mission to take note of Indian provocative and aggressive posture at CFL. “India at one-side massacring unarmed Kashmiris and on other-side killing the vulnerable population residing along the CFL”, he added.

Raja Farooq Haider Khan said that Indian Army’s morale has drastically down after humiliating trounced at the hands of Chinese Army. “The Pak Army is also giving befitting reply to the India for its offensive acts at CFL”, Haider stated.

He said valiant Armed Forces of Pakistan never target the innocent civilians residing on the other side of the bloody line.The Prime Minister directed the concerned authorities to provide best medical treatment facilities to the injured mother and son.

The City of knowledge Academy & Imam Ghazali Institute started global “Mini-Mosque” Campaign.

0
The City of knowledge Academy & Imam Ghazali Institute started global Mini-Mosque Campaign

Birmingham, U.K: The Muslim community around the world will celebrate the start of month-long fast of Ramadan facing unique circumstances in light of COVID19 and mass closure of Mosques globally. The City of knowledge Academy & Imam Ghazali Institute Birhamgham announced Mark Start of Ramadan with Global “Mini-Mosque” Campaign Followed by Thousands.

According to a press statement released by Uk based COK Academy, a campaign has been launched to address the issues Muslims may face this Ramadan after the closure of Mosques globally due to COVID19. In context of mass closure of Mosques and cancelled prayer services everywhere, the Uk based Mini-Mosque campaign seeks to encourage thousands of parents all over the world to bring joy and happiness to their children by crafting “mini” prayer spaces.

Read More: Where we stand in COVID19 war?

In lieu of the Mosque being open this Ramadan due to COVID-19, the campaign encourages parents and families alike to bring creative moments and imagination to life through play, storytelling, painting, and crafting with their families. It is expected that thousands of families across the globe spanning over 15 different countries will participate.

Ramadan is about family and togetherness, and we see this  manifested year after year through community, reflection, charity, and prayer. It is customary in Ramadan that in addition to fasting, Muslims increase in their worship and devotion to God, along with a stronger desire for charitable giving, said Shaykh Mohammed Aslam, Founder of The City of Knowledge Academy.

The City of knowledge Academy & Imam Ghazali Institute are amongst the most influential and leading Islamic educational and advocacy Organization in the United Kingdom and USA. At their core, both organisations seek to enhance understanding of Islam, promote tolerance and work towards social cohesion. Its campaign has largely been appreciated by the Muslim community in Europe and America.

Where we stand in COVID19 war?

0
Where we stand in war against COVID19

My spouse exposed of a COVID positive family.

Today at Sahur, my mother was worried about a suspected sick child cried whole night near my home. My mother asked me to inquire about his health and I stopped her not to visit the house in such a situation when Corona is knocking our doors. I also requested everyone to follow the SOP’s we have jointly made for our family to get ready, to be careful and be serious to deal with COVID19 in case we get it positive.

In the afternoon, when my spouse was standing at a super store to buy some food items, she heard shop owner discussing Corona and exchanging words with another customer that “You have a COVID19 positive at your home why you came out and exposing everyone”? He came out to get something he don’t have to cook at home; customer replied in a bit low tone. A medical team will come to take their samples and he is storing items to stay at home, as he knows authorities will not allow them to went out by tomorrow; he added.

When my spouse shared it with me, I feared of the whole story, straight away went to the super store she visited, confirmed the address of that customer and called the Police station.

In such a tense situation we may not be able to lighten back early. It is worst than we think and that has been indicated and analyzed by Senator Rehman Malik in his various articles in January and February 2020″.

I get a poor response from PS, “we have no orders to seal the house until now”; Police ASI replied in his professional tone. I was shivering as I know how dangerous it could be? I went to the Mosque and made an announcement to stay at home and also requested the family not to mess the whole area. I went to the house and dropped a letter from outside with some important contact numbers, an informative magazine, few masks, sanitizer, an herbal Medicine and password of a nearby WIFI they can use during the period. I did what I think I supposed to do but I am feared of authorities’ intention towards this issue. Being a nation how dangerous we are and how we are safe even after living in such a way? I think Allah has protected us with his greatness otherwise we are super failed, hard minded and bloody heroes of this world. We have 26,500 confirmed positive cases out of whole 3.85 Million in the world and shares 600+ deaths out of global 270K due to COVID19.

Where we stand in COVID19 war?

By today, we are calling ourselves a nation with strong immune system and we are touching the heights of extremism by poor planning and by taking a global epidemic so lightly. Lockdown was the need of time but we handled it un professionally, Our Prime Minister said that we cannot lock down the whole country otherwise the economy will be destroyed and the poor will starve to death.

Now, I am utmost sure that we have destroyed our economy, we are out of budget, we don’t  have anything to save our poor from hunger, our health professional are dying due to lack of Personal Protective Equipment (PPE’s), we have less than 3 billion in our COVID donation fund and now we are going to lose our population and on a fast track where COVID is affecting us like a sand storm destroy temporary shelters in desert.

It is much needed and maybe a chance for us to control and stabilize the situation by enforcing strict lock down for a period like we have seen in Wuhan but it looks difficult as our federal and Provincial Governments (specially Sindh) is not on same page working on self-made SOP’s that are very dangerous for the whole country. Federal and Punjab announced to lift the lock down they enforced for the last 30 days.

In such a tense situation we may not be able to lighten back early. It is worst than we think and that has been indicated and analyzed by Senator Rehman Malik in his various articles in January and February 2020. It is a challenge for the Federal Government to shake hand with opposition specially with (PPP) that rules in Sindh, stop claiming achievements and rather than advertising the “Rashun” distribution schemes they should invest on health facilities. Nation will never let him to go if the PM takes measures to save 220 Million in the U-turn of this epidemic.

Abdul Sami Baqsouie is a writer, Social Media activist and a Journalist. His favorite quote is “I don’t have fear to call spade a spade”. His story “Change is the only thing that is permanent in life” was first published in NY Times magazine 2016. He spoken extensively on geopolitical issues at different platforms.

KASHMIR: Peace route of South Asia

0
Kashmir issue by Tahir Tabassum

Dr. Muhammad Tahir Tabassum is a renowned writer, human rights activist, Ambassador of peace and President Institute of Peace and Development INSPAD Pakistan.

Kashmir conflict has been recognised internationally in United Nations since 1947, by the agreement of most of the countries passed resolutions with majority of votes. India has went to UN for ceasefire not Pakistan and UN passed resolutions to right to self determination of the people of Jammu & Kashmir.


It’s historical fact that kashmir was not part of india, it’s unfinished agenda of divide sub-continent. Kashmiri had their own rich and historical identity, big literature, language, poetry, spiritualism, religious, social and political worth with great traditions, norms and braveness and pioneer of food, art, dresses, pashmina, Shawls designs worldwide.

Spiritual and literature dominations started from hazrat Abdul Rehman Bulbul shah, Hazrat Shah Hamdan, Shaikh ul aalam Makhdom Hamza, Shaikh Nooruddin Reshi, Lela Arifa, Yaqub Serfi, Hazrat Perray Shah Ghazi, Pir Nizam Uddin Auwlia, Dr Allama Muhammad Iqbal, Allama Anwar shah Kashmiri, Sain Sohaili Sarkar, Mian Barkatullah Jhagvi, Mian Muhammad Bakhsh, Ghani Kashmiri, Ghulam Ahmed Mahjor, Khawaja Ghulam Moihuddin Ghaznavi, Baba Shadi Shaheed, Pir Syed Walayat shah Bukhari, Pir Said Ali shah Sohawvi, and hundreds of other great legendary personalities since many centuries.

India captured kashmir by brutal forces attack but Kashmiri never accepted Indian occupation since day of first.They are fighting back to India with best spirit and sacred cause for their homeland till India give right to self determination to join Pakistan or india. But Indian forces killings innocent population since three generations and Kashmiri giving morally very highest level sacrifices till freedom.

Mr Narendra Modi is a certified and recognised terrorist, fascist since he was CM Gujarat, he had killed thousands of Muslims in Allahabad, Ahmedabad and Gujrarat. He continued killings of Muslims and minorities of India. Thousands of Muslims injured in Delhi riots this last violence on citizenship law in December. The Muslims blood spilts on Delhi streets. UN, OIC strongly condemns to india illegal action included world leaders.

Modi removed kashmir special status article 370 and 305 A now create domicile problem also. India imposed curfew in Kashmir since 269 days. There is no food, no medical facilities, no any basic rights in kashmir and after CAVID-19 situation kashmiris are in very miserable because they are still facing beating, torture, state terrorism, search operations and injustice in whole state of Jammu Kashmir,latest in hindwara encounter Indian army used heavy ammunition in Pulwama to destroy residential houses to counter ill-trained local rebels, Indian army committing serious war crimes not only to neutralise them but also to destroy civilian property.

some observers worry that US government capacity to address South Asian instability is thin, and the US President’s July offer to ‘mediate’ on kashmir May have contributed to the timing of New Delhi’s moves

Kashmiris have been paying a heavy price for three decades to get there freedom. the World will remain silent because they have economic interests in India. But whole world must put in mind there is no peace without justice in South Asia and all rout of peace going from kashmir and if kashmir dispute not solve urgently then trillions dollars investment in India will be a dark dream for Muslims rulers and western countries who invested in India.

US Congress recent repot said that ‘’ the long-standing US position on kashmir is that the territory’s status should be settled through negotiations between India and Pakistan while talking into consideration the wishes of the Kashmiri people. The Trump administration has called for peace and respect for human rights in the region, but is criticism have been relatively muted. With key US Diplomatic posts vacant, some observers worry that US government capacity to address South Asian instability is thin, and the US President’s July offer to ‘mediate’ on kashmir May have contributed to the timing of New Delhi’s moves. The United States see’s to balance pursuit of a broad US-India partnership while upholding human rights as well as maintaining cooperative relations with Pakistan’’.

UN, EU and OIC must appoint special envoy for kashmir and allow world agencies Red Cross, Amnesty, HRW, Asia Watch, WHO and other rights & humanitarian organisations to visit kashmir and see grieve condition themselves.

India also committed violations of international law in LOC to continue firing and using automatic arms and heavy guns and many innocent civil populations killed in this firing. But we salute Pak Army who giving big surprise to indian army every place.
India doesn’t accepting any UN treaty, agreement, declaration since long, only doing unlawful activities in Kashmir and with minorities, whole world supporting Kashmiri freedom movement, even UN Secretary General, US President-and President of China offered to mediate on kashmir but india deaf and dum on this point of kashmir.
Worldwide institutions and governments aware the Indian inhuman attitude, barbarian genocide but there is no sense and vision seen in Indian leadership to fulfil their own commitments.

Now a days India harassing Kashmiri Journalists and activists to silent their voices and stop their pen but Kashmiris are very brave and courageous in freedom mission, dozens of journalists detained and under trail Shehla Rasheed,Basharat Masood, gowhar Gillani, Musarat Zohra, Pirzada Ashiq, Umar Khalid, Miran Haidar,Safoora Zargar are victimised by dragon laws.


Allah helping kashmir now, indian term starting now, there are dozen separation movements are very active in Assam, mezoram, Bengal, Khalistan, Arunachal perdash, Nagaland, Meghalaya, Tripura, Manipur, Nagaland, Bihar, jharkhand, Orissa, Madhya Perdash, chatisghar these separation movements are very successfully uprising in India, Khalistan movement is top in all because Sikhs are united worldwide.
I m sure Guzva e Hind time is very close to come and indian foolishness will be finish together forever in this holy war.

مفتی تقی عثمانی دنیا کی سب سے بااثرترین مسلم شخصیت قرار۔ عمران خان بھی ٹاپ ٹین میں شامل

0
Mufti Taqi Usmani named on leading most influential Muslim - Urdu

رائل اسلامک اسٹریٹجک اسٹیڈیز نے 500 بااثر مسلمان شخصیات کی فہرست جاری کردی۔

اسلام آباد: مفتی اعظم پاکستان مفتی تقی عثمانی کو دنیا کی سب سے بااثر مسلمان شخصیت قرار دے دیا گیا ہے۔ اس بات کا اعلان رائل اسلامک اسٹریٹجک اسٹیڈیز کی جانب سے جاری کردہ 500 بااثر مسلمان شخصیات کی فہرست میں کیا گیا۔ فہرست میں مزید کئی پاکستانی بھی شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق، بااثر مسلمانوں کی اس فہرست میں پاکستانی کے معروف عالم دین مفتی تقی عثمانی کو پہلے نمبر پررکھا گیا ہے، ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای دوسرے، متحدہ عرب امارات کے زید بن النہیان تیسرے، سعودی فرمانروا شاہ سلمان چوتھےاوراردن کے شاہ عبداللہ پانچویں نمبر پرہیں۔ رائل اسلامک اسٹریٹجک اسٹیڈیز سینٹر نے بااثر اسلامی شخصیات کے علاوہ دنیا کے بااثر ترین سیاسی رہنماوں کی فہرست بھی جاری کی ہے جس میں پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کو سال کی بہترین بااثر شخصیت قرار دیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں: کورونا نےامریکہ کوتباہی کے دہانے پرپہنچادیا۔

اپنے شعبوں میں نمایاں کارکردگی کے باعث نمایاں مقام حاصل کرنے والی بااثر شخصیت کی فہرست میں پاکستان کے چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ، گلوکارہ عابدہ پروین، سماجی کارکن بلقیس ایدھی، جے یو آئی ف کے رہنما مولانا فضل الرحمن، ن لیگ کے قائد میاں محمد نوازشریف اور کشمیری حریت رہنما میرواعظ عمر فاروق کے نام بھی شامل ہیں۔ رائل اسلامک اسٹریٹجک اسٹیڈیز سینٹر ہر سال نامور اسلامی شخصیات کے ناموں کی فہرست جاری کرتا ہے، روایت برقرار رکھتے ہوئے رواں سال بھی فہرست جاری کی گئی ہے جس میں کئی پاکستانی شخصیات کو شامل کر کے پاکستان کی اسلامی دنیا میں اہمیت کو تسلیم کیا گیا ہے۔

امریکہ تباہی کے دہانے پرپہنچ گیا، کورونا وائرس سے تباہی کے نئے ریکارڈ بننے لگے۔

0
Corona hits America - Urdu

امریکہ میں ایک ہی دن 2 ہزار 228 ہلاکتیں، ہلاکتوں کی تعداد چھبیس ہزارسے بڑھ گئی

واشنگٹن : کورونا وائرس نے امریکہ میں بڑے پیمانے پر تباہی پھیلادی ہے اورایک ہی دن میں 2 ہزار 228 ہلاکتوں کا نیا ریکارڈ قائم ہوگیا ہے۔ اس سے قبل 11 اپریل کو امریکہ میں ایک ہی دن میں 2 ہزار سے زائد ہلاکتیں ریکارڈ کی گئی تھیں۔

تفصیلات کے مطابق، امریکہ میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں 2 ہزار سے زائد ہلاکتیں ریکارڈ کی گئی ہیں۔ امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کی جانب سے جاری کردہ تازہ اعداد و شمار کے مطابق امریکہ میں 2 ہزار 228 ہلاکتیں ریکارڈ کی گئی ہیں جو کہ کورونا کے باعث کسی بھی ملک میں ایک ہی دن میں ریکارڈ کی جانے والی ہلاکتوں کی سب سے بڑی تعداد ہے۔

کورونا کے نئے کیسز اور اموات سے متعلق معلومات فراہم کرنے والے عالمی میٹر کے مطابق امریکہ میں گزشتہ روز کورونا کے اس حساب سے امریکہ میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں ریکارڈ کیے جانے والے کورونا کے کیسز تقریباََ 27 ہزار بنتے ہیں۔ کیسز کی تعداد 5 لاکھ 86 ہزار سے زائد ریکارڈ کی گئی تھی جو کہ اب بڑھ کر 6 لاکھ 13 ہزار سے زائد ہو چکی ہے۔

اس کے علاوہ پوری دنیا میں اس وقت کورونا وائرس کی تباہ کاریاں جاری ہیں۔ تازہ اعداد و شمار کے مطابق کورونا وائرس سے ہونے والی سب سے زیادہ ہلاکتیں امریکہ میں ریکارڈ کی گئی ہیں جہاں اب تک کورونا وائرس سے متاثرہ 26 ہزار 47 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ اٹلی جو کہ ایک وقت میں کورونا وائرس سے ہونے والی مسلسل ہلاکتوں کے بعد سب سے زیادہ متاثرہ ملک بن گیا تھا وہ ہلاکتوں کے اعتبار سے اب دوسرے نمبر پر ہے۔

اٹلی میں اب تک ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد 21 ہزار 67 ہے۔ امریکہ اور اٹلی کے بعد سب سے زیادہ ہلاکتیں ریکارڈ کرنے والا ملک اسپین ہے جہاں 18 ہزار 255 افراد مہلک وائرس کا شکار ہو کر لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ کورونا وائرس سے سب سے زیادہ ہلاکتیں ریکارڈ کرنے والے ممالک کی فہرست میں فرانس کا چوتھا نمبر آتا ہے جہاں پر ریکارڈ کی جانے والی ہلاکتوں کی تعداد اب تک 15 ہزار 729 ریکارڈ کے گئی ہے۔

اس کے بعد پانچویں نمبر پر برطانیہ آتا ہے جہاں پر مہلک وائرس سے ہلاک افراد کی تعداد 12 ہزار 107 ہو گئی ہے۔ علاوہ ازیں کورونا کے سب سے زیادہ کیسز رپورٹ کرنے والے ممالک کی فہرست میں امریکہ بدستور پہلے نمبر پر ہے۔

پی ایس ایل میں شریک غیرملکی کھلاڑی میں کورونا وائرس کا شبہ، پی ایس ایل ملتوی

0
PSL Cancelled due to Corona virus

پی ایس ایل ملتوی کرنے کا فیصلہ کھلاڑیوں، آفیشلزکاتحفظ ہے، وسیم خان

کورونا وائرس کی علامات ظاہر ہونیوالا کھلاڑی غیر ملکی ہے۔ چیف ایگزیکٹو پی سی بی

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ نے کورونا وائرس سے تحفظ کیلئے پاکستان سوپرلیگ پی ایس ایل ملتوی کردی۔

تفصیلات کے مطابق، پاکستان سوپر لیگ میں شامل ایک غیرملکی کھلاڑی میں کورونا وائرس کی علامات ظاہرہونے کےبعد پی ایس ایل کے باقی میچزمنسوح کردیئے گئے۔ چیف ایگزیکٹو پاکستان کرکٹ بورڈ وسیم خان کے مطابق پی ایس ایل کے باقی مانندہ میچزکودوبارہ کروایا جائے گا جس کا اعلان حالات بہترہونے سے قبل ممکن نہیں۔

وسیم خان نے اس بات کی تصدیق کی کہ ایک غیرملکی کھلاڑی میں جوپاکستان سوپرلیگ میں شریک تھا کورونا وائرس کی علامات پائی گئیں ہیں جس کیوجہ سے پی ایس ایل منسوح کی۔

مزیدپڑھیں: کورونا وائرس کا علاج دریافت، مسلمانوں کیلئے خوشی کی خبر

انہوں نے کہا کہ پی سی بی نے یہ اقدام کھلاڑیوں اور آفیشلز کی حفاظت کیلئے کیا۔ ہم نے سب کیلئے تمام حفاظتی اقدامات اٹھائے اوربغیرتماشائیوں کے میچزجاری رکھنے کی کوشش کی مگراب خطرات اتنے بڑھ چکے ہیں کہ اب اس کو جاری رکھنا بہترنہیں۔ انہوں نے پی ایس ایل میں شریک تمام غیرملکی کھلاڑیوں کاشکریہ ادا کیا کہ انہوں نےآخری وقت تک بغیرکسی خود کے پی ایس ایل میں اپنی شرکت یقینی بنائی۔

یادرہے،اس سے قبل کوروناوائرس کےپاکستان میں کیسز سامنے آتے ہی پی سی بی نے تمام غیرملکی کھلاڑیوں کوپی ایس ایل جاری رکھنے یا وطن واپس جانے کی فرمائش کردی تھی جسکے بعد کئی غیرملکی کھلاڑِی وطن واپس جاچکے ہیں۔

اسلام آباد کے پمزہسپتال نے مقامی لوگوں کے کورونا ٹیسٹ سے انکارکردیا

0
PIMS Islamabad Corona action - Urdu

مبینہ کرونا وائرس کا شکار افراد پرائیویٹ لیبارٹریزسے ٹیسٹ کروائیں، انتظامیہ نے نوٹس چسپاں کردیئے۔ کالم نگار عَِفت حسن کا دعوی

اسلام آبا د: وفاقی دارلحکومت اسلام آباد کے پمز ہسپتال کی انتظامیہ نے مقامی افراد کےکورونا ٹیسٹ کرنے سے انکار کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق، کالم نگارعِفت حسن رضوی نے اپنی ایک سوشل میڈیا ویڈیو میں یہ دعوی کیا ہے کہ اسلام آباد پمز ہسپتال نے مقامی شہریوں کا کرونا وئارس کا ٹیسٹ کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ پمز ہسپتال مین صرف ان لوگوں کے بلڈ سنمپل لئے جا رہے ہیں جن افراد نے 14 دن میں ملک سے باہر سفر کیا ہے۔

پمز انتظامیہ کی جانب سے ایمرجنسی کے باہرچسپاں کیا گیا نوٹس

ایک اور سوشل میڈیا ایکٹوسٹ اقصی یسین نے عفت حسن کے اس دعوے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں اورانکی فیملی کوشدید بخار،کھانسی اور نزلہ کی شکایت پر پمزمیں دھکے کھانے پڑے،سرد موسم اورلمبی قطارمیں انتظار کے بعد جب ایمرجینسی کائونٹرتک رسائی ملی تو کہا گیا نزلہ، زکام کے مریضوں کو ایمرجینسی میں معائنہ کرنے سے منع کیا گیا ہے آپ نئی ایمرجینسی کورونا ڈسک پر جائیں، اقصی کے مطابق وہاں بھی قطار کے لگنے کے بعد معائنہ سے انکارکردیا گیا کہ آپ این آئی ایچ میں جاکر چھ ہزار روپیہ دیں اور ٹیسٹ کروائیں۔

مزید پڑھیں: کورونا وائرس کا علاج دریافت، مسلمانوں کیلئے خوشی کی خبر

ہمز ہسپتال انتظامیہ کا مریضوں سے رویہ انتہائی ہتک آمیز ہے اورمعمولی نزلہ زکام کے مریضوں کو بھی معائںے کیلئے رسوا ہونا پڑتا ہے۔ عام شہریوں کو کرونا کا شبہ ہونے پر انہیں پرائیویٹ ہسپتالوں سے رابطہ کرنے کا مشورہ دیا جا رہا ہے۔ اگر آپ کو کسی ڈاکٹر نے پمز ہسپتال بھیجا ہے پھر بھی آپ کو این آی ایچ رابطہ کرنے کی ہدایت دی جا ئے گی۔

عفت حسن رضوی نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے دعویٰ کیا تھا کہ پاکستان نے کرونا وائرس سے نمٹنے کیلئے تیاریاں کر رکھی ہیں تاہم عام شہریوں کو کرونا وائرس کے شبہ میں پمز اسپتال ٹیسٹ نہیں کرتا۔

سندھ میں کرونا وائرس کے کیسز کی تعدا د 76 جبکہ پاکستان میں کرونا وائر کی تعدا د94 سے بڑھ گئی ہے۔

یادرہے، کورونا وائرس کی بڑھتی تعداد کے باعث ملک بھرکے تعلیمی اداروں کو 5 اپریل تک بند کردیا گیا ہے۔ عالمی ادارہ صحت نے کورونا سے نمٹنے کیلئےحکومت پاکستان کے اقدامات کو سراہا ہے۔

کورونا وائرس کا علاج دریافت، مسلمانوں کیلئے خوشی کی خبر

0
Corona virus and Islam - Urdu

کراچی (خصوصی رپورٹ) کورونا وائرس کے چرچے زبان زد عام ہیں اور یہ وائرس دنیا کے 140 ممالک میں 2 لاکھ لوگوں کو متاثر جبکہ 6 ہزارکے قریب جانیں لے چکا ہے اورابھی تک اس وائرس کی کوئی دوائی ایجاد نہیں ہوسکی ہے۔

مسلمانوں کیلئے یہ سعادت مندی کی بات ہے کہ رسول اللہﷺنے 14سو سال قبل ہی جان لیوا وباء سے نمٹنے کا حل بتا دیا تھا، رسول پاکﷺ کے طریقہ پر عمل کرکے دنیا کو وائرس کے مہلک اثرات سے بچایا جا سکتا ہے، حکومت کو چاہیے اسی طریقے کو لے کر لوگوں میں آگاہی مہم بھی چلائی جائے۔

محققین کے مطابق،رسول اللہ ﷺ نےفرمایا کہ جب کسی علاقے میں طاعون پھیلنے کی خبر سنو تو وہاں سے مت بھاگو، قسمت ہیں، کہ ان کا تعلق ایک مذہب اسلام ہے، مقصد یہاں کسی دوسرے مذہب کو کم تر سمجھنا نہیں، بلکہ دوسرے مذاہب کا احترام اپنی جگہ لیکن اسلام دنیا پر بسنے والے تمام لوگوں کیلئے ایک مکمل ضابطہ حیات ہے۔

جس میں زندگی گزارنے کے اصولوں سے لے کر جان لیوا بیماریوں، قدرتی آفات سے نمٹنے کا حل بھی بتا دیا گیا ہے، قرآن پاک اللہ پاک کی کتاب جو مسلمانوں کیلئے ایک نعمت ہے،جس سے مسلمان ہی نہیں بلکہ پوری دنیا مستفید ہو رہی ہے۔

مزید پڑھیں: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو کورونا وائرس خطرہ، بس رپورٹ کا انتظار

اگر کورونا وائرس جس نے پوری دنیا میں خوف طاری کیا ہوا ہے، معیشت تباہ ہورہی ہے، اسٹاک مارکیٹس شدید مندی کا شکار ہیں، اس سنگین موجودہ صورتحال کو دیکھا جائے تو بھی اسلام ان موذی وباء سے نمٹنے میں ہماری رہنمائی فرما رہا ہے۔

رسول اللہﷺنے 1400 سال پہلے کورونا جیسی وباء سے نمٹنے کا طریقہ بتا دیا تھا۔ رسول اللہ ﷺ نےفرمایا کہ جب کسی علاقے میں طاعون پھیلنے کی خبر سنو تو وہاں مت جاؤ، اور جس علاقے میں تم موجود ہو اور طاعون پھوٹ پڑے تو ڈر کر باہر مت بھاگو۔ صحیح مسلم اور بخاری میں یہ دونوں احادیث نقل ہوئی ہیں جن کے مطابق کسی وبا کی صورت میں متاثرہ علاقے سے باہر نکلنا اور اس علاقے میں داخل ہونے سے منع فرمایا گیا ہے۔

دوسری جانب کورونا وائرس کا پھیلاوٴ کو روکنے کیلئے حکومت پنجاب کی جانب سے کتابچہ جاری کیا گیا ہے، یہ کتابچہ لوگوں میں آگاہی مہم کے تحت تیار کیا گیا۔ جس کے ذریعے کورونا وائرس سے بچاؤ کی حفاظتی تدابیر سے لوگوں کو آگاہ کیا جائے گا۔ تمام ڈی ای اے اور سی ای اوز ایجوکیشن کو ہدایت جاری کی گئی ہیں کہ یہ کتابچہ تمام نجی و سرکاری سکولوں میں لگائیں جائے تاکہ کورونا وائر س کیخلاف جاری جنگ کو جیتا جا سکے۔

بتایا گیا ہے کہ کھانسی یا چھینک کے ساتھ خارج ہونے والی بوندیں یا ذرات وائرس کی دوسروں میں منتقلی کا باعث بنتا ہے۔ شعور اُجار گر کرتے ہوئے کہاگیا ہے کہ اگر آپ کسی کو کھانستے یا چھینکتے دیکھیں تو کھانسنے والے شخص کم از کم ایک میٹر تک دور رہیں۔ جبکہ ماسک کا استعمال صرف بیمار افراد کیخلا ف کیلئے ہے۔ صحت مند افرد کو ماسک لگانے کی ضرورت نہیں ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو کورونا وائرس نہیں، ٹیسٹ سے سب معلوم ہوگیا

0
Trump has corona virus - Urdu

نیویارک: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی کورونا وائرس کی ٹیسٹ رپورٹ منفی آگئی۔ صدر ٹرمپ کی میڈیکل رپورٹ تسلی بخش ہیں، امریکی صدر میں کورونا وائرس کی تشخیص نہیں ہوئی۔

تفصیلات کے مطابق، چندروز قبل ٹرمپ سے ملاقات کرنے والے دو برازیلین حکام میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی جس کے بعد وائٹ ہائوس کے میڈیکل ڈاکٹرز نے انہیں ٹیسٹ کرانے کا مشورہ دیا تھا۔

ہفتہ کو ٹرمپ نے اپنے بیان میں کہا کہ کورونا وائرس کا ٹیسٹ کرا لیا ہے اور اب رپورٹ کا انتظار کر رہا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ مجھے بخار نہیں، میری حالت نارمل ہے تاہم ڈاکٹرز کے مشورے کے بعد احتیاطی تدابیر کے طور پر ٹیسٹ کرایا ہے۔

مزید پڑھیں: موجودہ حکومت نے معیشت کوتباہی کے دھانےتک پہنچا دیاہے۔ مولانافضل الرحمن

مجھے بخار نہیں، میری حالت نارمل ہے تاہم ڈاکٹرز کے مشورے کے بعد احتیاطی تدابیر کے طور پر ٹیسٹ کرایا ہے۔

میڈیکل ڈاکٹر نے ٹرمپ کے ٹیسٹ سے ایک روز قبل کہا تھا کہ امریکی صدر میں کورونا وائرس کی کوئی علامات ظاہر نہیں ہوئیں اس لیے انہیں قرنطینہ میں رکھنے کی ضرورت نہیں۔

یادرہے، کورونا وائرس دنیا کے 140 ممالک تک پھیل چکا ہے اور اس سے ڈیڑھ لاکھ کےقریب لوگ متاثر جبکہ 5000 سے زائد ہلاکتیں ہوچکیں ہیں۔ پاکستان میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 33 ہے جبکہ کوئی بھی ہلاکت نہیں ہوئی۔ حکومت پاکستان نے وائرس کے خدشے کے پیش نظر ملک بھرمیں ہیلتھ ایمرجینسی لگادی ہے اورعوامی اجتماعات پر پابندی اور سکولوں، کالجز، مدرسوں اور یونیورسٹیوں میں 05 اپریل تک تعطیل کا اعلان کیا ہے۔

موجودہ حکومت نے معیشت کوتباہی کے دھانےتک پہنچا دیاہے۔ مولانافضل الرحمن

0
Pakistan is in trouble only due to PTI - Urdu copy

اسلام آباد: جمیعت علماء اسلام کے امیرمولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ نااہل حکومت کی منفی پالیسیوں نے ملکی معیشت کو آئی ایم ایف کا محتاج بنادیاہے، اوراس وجہ سے لوگ ملک میں واپس آنے کے بجائے باہربھاگ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے شرح نمو2 فیصد دکھاکرقوم کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی کوشش کی اوراس حکومت نےآئی ایم ایف کے کہنے پرمہنگائی کررکھی ہے۔

اسلام آباد میں تحفظ آئین کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ نااہل حکمرانوں کی وجہ سے ملکی معیشت تباہ، سرمایہ غیر محفوظ، ملک میں کارخانے بند اور مہنگائی عروج پر ہے۔

مزیدپڑھیں: حکومت کا اہم اقدام، نوازشریف کو ڈی پورٹ کروانے کیلئے برطانیہ سے رابطے کا فیصلہ

سربراہ جے یو آئی (ف) نے کہا کہ سی پیک کو ناکام بنانے کے لیے نواز شریف کا نااہل کرنا ضروری تھا، نواز شریف اور زرداری سمیت سیاستداتوں کو سزائیں اسی مقصد کے لیے دی جارہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے ملک میں آئین ہے مگر آزاد اور زندہ نہیں ہے، طاقتور جب چاہیں قانون کی شکل بگاڑ لیتے ہیں، جس جج کے فیصلے اچھے نہ لگیں، ان کے خلاف ریفرنس آجاتے ہیں، عدلیہ اور وکلاء برادری آئین و قانون کو تحفظ نہ دے سکے تو ملک کہاں جائے گا؟

انہوں نے مزید کہا کہ محرومی کے احساس کو ختم کرنا ہے تو آئین پر عمل کرنا ہوگا، 18 ویں ترمیم سے صوبوں کے اختیار میں اضافہ ہوا ہے لیکن وفاق صوبوں کو اختیار دینے میں تامل کا اظہار کر رہا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ایک وقت تھا جب نریندر مودی کہتا تھا آؤ بات کریں، اب وہی مودی ہے جو ان کی بات بھی نہیں سنتا، حکومت کے پاس بھارت کے مسلمانوں کے حق میں آواز بلند کرنے کی صلاحیت ختم ہو چکی ہے۔

حکومت کا اہم اقدام، نوازشریف کو ڈی پورٹ کروانے کیلئے برطانیہ سے رابطے کا فیصلہ

0
Nawaz will be deported back, federal government decides - Urdu

اسلام آباد: نواز شریف کو ہرصورت واپس لائیں گے، انہیں واپس لانے کیلئے اورڈی پورٹ کروانے کیلئے وفاقی حکومت نے حکومت برطانیہ کو خط لکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ انکشاف معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے کیا، انہوں نے کہا کہ نوازشریف کی واپسی کا وقت آ پہنچا ہے، اگلے ہفتے ڈی پورٹ کرانے کے لیے برطانوی حکومت کو خط لکھیں گے۔

مزیدپڑھیئے: وفاقی وزیرآئی ٹی فواد چودھری نے رمضان المبارک کی تاریخ کا اعلان کردیا،نئی بحث چھڑگئ

ان کا کہنا تھاکہ امریکااورافغان طالبان کے درمیان امن معاہدہ ایک بڑی کامیابی ہے اورعمران خان کے نظریئے کی تائید ہے۔ افغانستان میں امن پورے خطے کے استحکام کے لئے ضروری ہے، امن معاہدے کیلئے پاکستان کا کردار سنہری حروف میں لکھا جائیگا۔

یاررہے، اس سے قبل سینئر تجزیہ کارحامد میرنے دعویٰ کیا تھا کہ میاں نواز شریف پاکستان واپس آئیں گےاورسیدھا جیل جائیں گے۔ نجی چینل کے پروگرام میں گفتگوکرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ نوازشریف جیل جانے کے لئے ہی پاکستان واپس آئیں گے۔ انہوں نےکہا کہ نوازشریف علاج کیلئے لندن گئے ہیں اورعلاج مکمل ہونے کے بعد واپس آجائیں گے ۔

HOT NEWS

CLIMATE CHANGE